لداخ میں ہمارے جوانوں کو غیر مسلح بھیجنے کا ذمہ دار کون ہے؟: راہل گاندھی

نئی دہلی (آئی این ایس انڈیا):وادی گیلوان میں چینی فوج کے جوانوں کے درمیان تصادم میں ایک کرنل سمیت 20 ہندوستانی اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ اس معاملے میں کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی مرکز کی نریندر مودی حکومت کو مسلسل نشانہ بنارہے ہیں۔ راہل نے کہا کہ چین نے ہندوستان کے غیر مسلح فوجیوں کو مار کر ایک بڑا جرم کیا ہے۔ میں یہ پوچھنا چاہتا ہوں کہ ان جوانوں کو ہتھیاروں کے بغیر کس نے بھیجا اور کیوں؟ کون ذمہ دار ہے اس سے قبل ایک ویڈیو شیئر کرتے ہوئے راہل گاندھی نے پوچھا کہ ہندوستانی فوجیوں کو غیر مسلح کیوں تھے؟ چین ہمارے غیر مسلح فوجیوں کو مارنے کی ہمت کیسے کرتا ہے؟ کانگریس کے سابق صدر نے بدھ کے روز وزیر دفاع راجناتھ سنگھ پر بھی حملہ کیا۔ راج ناتھ سنگھ نے فوجیوں کے نقصان پر اظہار تعزیت کرتے ہوئے ایک ٹویٹ کیا تھا، جسے راہل گاندھی نے ری ٹویٹ کرتے ہوئے ان سے کچھ سوالات کئے تھے۔ انہوں نے کہا کہ اگر آپ کو بہت تکلیف ہو رہی ہے تو مجھے بتاو کہ ٹویٹ میں چین کا نام نہ لیتے ہوئے آپ نے ہندوستانی فوج کی توہین کیوں کی؟ آپ دو دن بعد کیوں افسوس کا اظہار کررہے ہیں؟ کیوں ریلی سے خطاب کررہے تھے۔ جب ایک طرف فوجی شہید ہورہے تھے؟ واضح رہے کہ مشرقی لداخ میں چینی فوجیوں کے ساتھ جھڑپوں میں 20 ہندوستانی فوجی اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے، جبکہ چار سے پانچ فوجی شدید زخمی ہوئے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *