حیدرآباد آبروریزی وقتل کیس:فاسٹ ٹریک کورٹ میں ہوگی معاملے کی سماعت

protest

تلنگانہ کی راجدھانی حیدرآباد میں ایک خاتون ڈاکٹر کے ساتھ گینگ ریپ، قتل اور جلا دینے کے دل دہلا دینے والے معاملے نے پورے ملک کوجھنجھورکررکھ دیاہے۔اس واقعہ کے خلاف پورے ملک میں لوگ سڑکوں پراترآئے ہیں اورجگہ جگہ مظاہرے کررہے ہیں۔ بہرکیف تلنگانہ کے رنگاریڈی ضلع میں 26 سال کی خاتون ڈاکٹرسے گینگ ریپ اور قتل کیس کی سماعت اب فاسٹ ٹریک کورٹ میں ہوگی۔ ہائی کورٹ نے معاملے کو فاسٹ ٹریک کورٹ میں سماعت کی اجازت دے دی ہے۔ ڈاکٹر کی آبروریزی اور قتل کیس کی سماعت کے لئے محبوب نگر ضلع کورٹ میں ایک اسپیشل کورٹ قائم کیا جائے گا۔

بتا دیں کہ اس واقعہ کے بعد پورے ملک میں غم اور غصے کا ماحول ہے۔ اسے لے کر جگہ جگہ مظاہرے ہو رہے ہیں۔ پارلیمنٹ سے لے کر سڑک تک اس گونج سنائی دے رہی ہے۔ گزشتہ اتوار کو وزیر اعلی کے چندر شیکھر راؤ نے معاملے کی فوری سماعت کے لئے ایک فاسٹ ٹریک کورٹ قائم کرنے کا حکم دیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *