ghazal

کاشانۂ رقصاں میں !!

مہجوری و وحشت کو دعوائے رسائی ہو اور میری نگاہوں میں تصویر نیازیؔ ہو اے مطرب و سازندو! چھیڑو کوئی ایسا ساز جو وصل و تقرب کی خوشیوں کا پیامی …

Read More