جامعہ ملیہ اسلامیہ دہلی سے محمد وجہ القمر کو پی ایچ ڈی کی ڈگری تفویض

wajhul qamar

نئی دہلی:ملک کامایہ ناز تعلیمی ادارہ اور حال ہی میں جاری رینکنگ میں مرکزی یونیورسٹیوں میں سر فہرست جامعہ ملیہ اسلامیہ کے عربی ڈپارٹمنٹ کے ہونہار طالب علم محمدوجہ القمرکو پی ایچ ڈی کی ڈگری تفویض کی گئی ہے۔ گذشتہ روزیعنی 13اگست کو جامعہ کے شعبہ عربی زبان نے گوگل میٹ پر پی ایچ ڈی کے واییوا کا انعقاد کیا جس میں شعبہ کے اساتذہ اور طلباء کے علاوہ ایکسپرٹ کے طور پر دہلی یونیورسٹی کے پروفیسر ڈاکٹر نعیم الحسن اثری  نے شرکت کی۔ محمدوجہ القمر نے ڈاکٹر اورنگ زیب اعظمی و ڈاکٹر ہیفاء شاکری کی نگرانی میں اپنی پی ایچ ڈی مکمل کی ہے۔ پی ایچ ڈی کا موضوع،”عراقی خواتین ناول نگاروں کا عربی زبان وادب کی ترویج وترقی میں اہم کردار” ہے۔ موصوف نے بیسویں صدی کے اواخر میں عراقی خواتین کے ذریعے لکھے گئے ناولوں کا ادبی و فنی جایزہ پیش کیاہے۔ بیسویں صدی کے نصف آخر?میں عراقی خواتین کے ذریعے سو سے زاید ناول لکھے گئے جس میں عراق میں تقریباً تین دہائیوں تک جاری جنگ و جدال اور اس کے نتیجے میں ھجر مکانی کے لئے مجبور ہوئے عراقی عوام کی پریشانیوں اور اپنوں سے جدائی کے آلام اور سماج میں پڑنے والے منفی اثرات کو خصوصی طور پر موضوع بحث بنایا گیا ہے۔ موصوف نے اپنی پی ایچ ڈی میں ان تمام چیزوں کا احاطہ کرتے ہوئے ادبی طور پر عربی زبان پر پڑنے والے اثرات کا جائزہ پیش کیا ہے۔

موصوف نے سیمانچل کے ضلع ارریہ سے ابتدائی تعلیم حاصل کی۔ بعد میں اعلی تعلیم کے لئے لکھنؤ اور دہلی کا سفر کیا۔ دہلی کی مایہ ناز یونیورسٹی جواہر لال نہرو سے گریجویشن اور پوسٹ گریجویشن کی ڈگری مکمل کی۔ اس کیبعد وہ صحافت کے پیشے سے وابستہ ہوگئے، اور چند برسوں کی صحافتی خدمات انجام دینے کے بعد وہ پھر سے تعلیم کے میدان سے جڑ گئے۔ اور جامعہ ملیہ اسلامیہ سے اپنی تعلیم کو جاری رکھا۔ پانچ سال کی انتھک کوششوں کے بعد پی ایچ ڈی کی تعلیم مکمل کی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *